17

سکول جلانے والے بچ نہیں پائیں گے،خالد خورشید

گلگت(نیوزمارٹ ڈیسک)وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید کا داریل ویلی میں گرلز سکول جلائے جانے کے واقعے کا سخت نوٹس۔ انتظامیہ، پولیس و دیگر متعلقہ اداروں کو فوری تحقیقات کا حکم دے دیا ۔وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے داریل میں گرلز سکول جلائے جانے کے واقعے کا سخت نوٹس لیتے ہوئے انتظامیہ، پولیس، و دیگر متعلقہ اداروں کو فوری تحقیقات کرکے رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ واقعے میں ملوث افراد کو کیفرادار تک پہنچائیں گے۔ وزیراعلی نے سکول کی فوری بحالی کے بھی احکامات دیے ہیں۔ادھر ڈپٹی کمشنر دیامر فیاض احمد ڈائریکٹر ایجوکیشن دیامر استور ڈویڑن جہانزیب خان کے ہمراہ گرلز مڈل سکول سیمیگال پائین داریل پہنچ گئے۔رات کو نامعلوم افراد کی جانب سے آگ لگائے جانے کی وجہ سے متاثرہ گرلز مڈل سکول سیمیگال پائین کا جائزہ لیا۔چیف سیکرٹری گلگت بلتستان محی الدین وانی کی احکامات کے روشنی میں سکول کی دوبارہ مرمت اور فوری طور پر فنکشنل کرنے کے لئے خصوصی اقدامات کرنے کی ہدایات دی جبکہ و پارلیمانی سیکریٹری برائے تعلیم گلگت بلتستان ثریا زمان نے کہا کہ داریل میں بچیوں کی مڈل سکول کو آگ لگانے والوں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے گی اور سکول جلانے کی وجوہات کو عوام اور حکومت کے سامنے لایا جائے گا۔ انھوں نے کہا کہ طالبات کو تعلیم سے دور رکھنے کی سازش کو کبھی کامیاب ہونا نہیں دیا جائے گا. انھوں نے کہا کہ داریل کے عوام مل کر ان تعلیم دشمن عناصر کے خلاف احتجاج کرینگے کیونکہ خواتین کی تعلیم کے بغیر کسی بھی علاقے کی ترقی مکمن نہیں ہے۔ انھوں نے کہا کہ دیامر کی خواتین کو تعلیم میں آگے لانے کی ضرورت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں