14

جی بی کابینہ کا اجلاس،گندم ریٹ نہ بڑھانے، رواں سال بلدیاتی انتخابات کرا نے کا فیصلہ،واٹر اینڈ پاور کے 2017 اور 2018 کے بقایاجات کے ادائیگی،سی ایم اسسٹنٹ پیکج فارم ایمپلائمنٹ ایکٹ کی منظوری، وزیر اطلاعات فتح اللہ خان

گلگت(نمائندہ پناہ نیوز)گلگت بلتستان کابینہ کا اجلاس وزیراعلی سیکریٹریٹ گلگت میں منعقد ہوا وزیر اعلی گلگت بلتستان خالد خورشید خان نے اجلاس کی صدارت کی۔اجلاس میں مفاد عامہ کے مختلف امور کی منظوری دی گئی۔کابینہ اجلاس کے فیصلوں کے بارے میں صحافیوں کو بریفنگ دیتے ہوئے وزیر اطلاعات فتح اللہ خان،وزیر خزانہ جاوید منوا اور ترجمان وزیر اعلی امتیاز علی تاج نے کہاکہ صوبائی کابینہ نے گلگت بلتستان میں رواں سال بلدیاتی انتخابات کرانے،گندم کا ریٹ نہیں بڑھانے اور لوکل گورنمنٹ کے عارضی ملازمین کی کم سے کم تنخواہ کو سولہ ہزار ایک سو روپے کرنے کی منظوری دی ہے انہوں نے کہا کہ کابینہ نے گلگت بلتستان میں واٹر اینڈ پاور کے مینٹیننس کے بقایہ جات کی مد میں واجب الاد رقم کی ادائیگی، گلگت بلتستان میں پیپرا کے ادارے کے قیام،مستقلی ایکٹ ملازمین کے تحت 4983 ملازمین کو قانونی تقاضے پورے کر کے مستقل کرنے کے معاملے کا جائزہ لینے،محکموں میں ری ڈیزگنیشن اورپوسٹنگ، وزیراعظم ہاؤسنگ سکیم کے تحت گلگت بلتستان میں بارہ سو گھر بنانے، کنٹریکٹ ختم ہونے کے بعد ملازمت سے فارغ ہونے والے ڈاکٹروں کی دوبارہ ملازمت کی بحالی، سروس ٹربیونل میں ججوں کی تقرری کے حوالے سے قانونی تقاضے پورے کرنے،نیٹکو کو منفع بخش ادارہ بنانے اور ادارے میں مزید نوکریوں پر بھی پابندی لگانے سمیت دیگر امور کی منظوری دی گی ہے صوبائی وزرا نے مزید کہا کہ بلدیاتی انتخابات اسی سال کے آخر میں کرائے جائنیگے واٹر اینڈ پاور کے 2017 اور 2018 کے بقایاجات کے ادائیگی کی منظوری دے دی گئی ہے گندم کی قیمتوں میں اضافہ نہیں کیا جائے گا ایک لاکھ سے زائد گندم کی بوریوں کا اضافہ کر دیا گیا ہے سی ایم اسسٹنٹ پیکج فارم ایمپلائمنٹ ایکٹ کی منظوری دی گئی ہے ہاوسنگ سکیم کے تحت 1200 فلیٹس تعمیر کیئے جاینگے سکردو ایئرپورٹ کی توسیع کے لئے 1129 کنال اراضی پی اے ایف کو دینے کے لئے کمیٹی بنا دی گئی ہے نیٹکو میں نئی بھرتیوں پر پابندی عائد کرتے ہوئے نیٹکو کے مختلف بینکوں سے لیے گیے تقریبا 35 کروڈ روپے کے قرضے حکومت ادا کرے گی سینٹرل قراقرم نیشنل پارک کی صفائی کے لئے انوائرمینٹ فنڈ سے 24 ملین روپے کی منظوری دی گئی ڈاکٹرز کی دوبارہ تعیناتی اور برطرفی کے قانون کی منظوری دی گئی ہے ڈاکٹرز اب 3 کے بجائے 2 سال بعد ہی ایف سی پی ایس کے لئے جا سکیں گے نیٹکو کے مختلف بنکوں سے لئے گئے 35 کروڑ روپے کے قرضے حکومت نے دینے کی منظوری دے دی ہے لوکل گورنمنٹ کے کنٹیجنٹ پیڈ ملازمین کی تنخواہ 16100 کر دی جائے گی لیویز فورس کے سروس رولز کی منظوری بھی صوبائی کابینہ اجلاس میں دے دی گئی ہے۔
اجلاس

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں