45

پی ٹی آئی حکومت میں سیاحت کو فروغ ملا، گلگت بلتستان کی ترقی کے لئے 300 ارب روپے سے زائد کا پیکیج دیا گیا، فواد چوہدری

سکردو(نمائند خصوصی):وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت میں سیاحت کو فروغ ملا، گلگت بلتستان کی ترقی کے لئے 300 ارب روپے سے زائد کا پیکیج دیا گیا، پی آئی اے نے سکردو کے لئے ماضی کے مقابلے میں زیادہ فلائیٹس چلائیں، ماضی کی حکومتوں نے گلگت بلتستان کے انفراسٹرکچر پر کوئی توجہ نہیں دی، سکردو پریس کلب میں نوجوان صحافیوں کو ڈیجیٹل تربیت کے لئے انتظامات کئے جا رہے ہیں، سکردو اور دیگر بڑے اضلاع کی ٹاﺅ ن پلاننگ کی جائے گی تاکہ وہاں رہنے والے لوگوں کے لئے مسائل پیدا نہ ہوں، علاقے کی ترقی مقامی حکومتوں کے قیام سے ہی ممکن ہے، احتساب کے حوالے سے چلنے والے کیسز میں روزانہ کی بنیاد پر پیشرفت ہونی چاہئے، ہم احتساب کے عمل کو منطقی انجام تک پہنچانا چاہتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہفتہ کو سکردو پریس کلب میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ سکردو پریس کلب کو گرانٹ رواں مہینے مل جائے گی، اس سے ان کا ایک مطالبہ پورا ہو جائے گا، اس کے علاوہ یہاں نوجوان صحافیوں کو ڈیجیٹل تربیت فراہم کرنے کے لئے اقدامات کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ سکردو میں سیاحت کو فروغ مل رہا ہے، پی آئی اے نے بھی اپنی فلائیٹس شروع کی ہیں جو ایک مثالی اقدام ہے، ایک روز میں تین تین فلائیٹس چل رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہاں سیاحت کے امکانات زیادہ ہیں لیکن ہمارے پاس انفراسٹرکچر کم ہے، ہمیں انفراسٹرکچر کو بہتر بنانا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ یہاں سیاحت کا شعبہ تیزی سے ترقی کی جانب بڑھے گا۔ وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ سکردو کے صحافیوں کو ایسی تربیت فراہم کرنے کی ضرورت ہے جس میں ماحول دوست اور سیاحت سے جڑی رپورٹنگ کی کلاسز بھی شامل ہوں، اس کے لئے ہم یونیورسٹی سے بات کریں گے۔ سکردو کے صحافیوں کی ترقی کے لئے جو کچھ کر سکے، ہم کریں گے۔ وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے گلگت بلتستان کے انفراسٹرکچر کو بہتر بنانے کے لئے 300 ارب روپے سے زائد کا پیکیج دیا۔ انہوں نے کہا کہ گلگت، سکردو اور دیگر شہروں کی ٹاﺅن پلاننگ کے لئے ماسٹر پلان بنایا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر منصوبہ بندی کے بغیر تعمیرات ہوں گی تو اس کے نتیجے میں آئندہ آٹھ سے دس سالوں میں مسائل پیدا ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ آج کراچی کے مسائل کی بنیادی وجہ بھی یہی ہے۔ اگر تعمیرات میں پلاننگ نہیں ہو گی تو مسائل پیدا ہوں گے، اس میں منصوبہ بندی کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان سی پیک کے اہم روٹ پر واقع ہے، یہاں ماضی میں ملک دشمنوں کی جانب سے ریشہ دیوانیاں ہوئیں لیکن اس علاقے کے لوگوں کے دل ہمارے ساتھ جڑے ہوئے ہیں۔ افغانستان کے حوالے سے وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ پاکستان کی کوشش ہے کہ افغانستان کے اندر معاملات خوش اسلوبی سے طے ہو جائیں، افغانستان میں جنگ بندی روکنے کے لئے ہم نے بھرپور کوششیں کیں، امن کے لئے ہماری کوششیں جاری رہیں گی۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کی طرف سے ریشہ دیوانیوں کا سلسلہ جاری ہے، کشمیر کے مسئلہ پر جس طریقے سے نریندر مودی کی حکومت نے مسلمانوں اور کشمیری عوام کے خلاف کارروائیاں کیں، ہم اس کی شدید مذمت کرتے ہیں، مسئلہ کشمیر پر پاکستان اور گلگت بلتستان کے عوام کا موقف ایک ہے، ہم نے کشمیری عوام کے ساتھ یکجہتی کے اظہار کے لئے بھارت سے تجارت ختم کی، کرکٹ سیریز دکھانے کے حوالے سے ہم نے معاہدے بھی اسی وجہ سے ختم کئے کیونکہ جن کمپنیوں کے پاس یہ میچ دکھانے کے رائٹس تھے ان کا تعلق بھارت سے تھا۔ انہوں نے کہا کہ طویل عرصے تک ن لیگ نے یہاں حکومت کی، ان کی عدم توجہی کی وجہ سے سکردو کی سرکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شہر کی 15 کلو میٹر سڑکیں اس سال اور 15 کلو میٹر آئندہ سال مکمل ہوں گی، پہلی مرتبہ یہاں کارپٹڈ سڑک ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ میں گلگت بلتستان کی ترقی کے لئے تاریخ کا سب سے بڑا حصہ مختص کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ کی ہر طبقہ فکر کے لوگوں نے تعریف کی، ہم نے بجٹ کو کاروباری اور تنخواہ دار طبقہ کی مشکلات کو مدنظر رکھ کر تیار کیا ہے اور پاکستان کے عوام نے اس بجٹ کا خیرمقدم کیا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ احتساب کے عمل کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے۔ نواز شریف اور مریم نواز کے کیسز میں انہیں سزا ہو چکی ہے، نواز شریف ملک سے فرار ہیں۔ شہباز شریف کے کیس کے حوالے سے روزانہ کی بنیاد پر سماعت ہونی چاہئے تاکہ یہ مقدمات اپنے منطقی انجام کو پہنچ سکیں۔ ایک اور سوال پر انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومتیں انصاف پر مبنی مقامی حکومتوں کا نظام لائیں گی تو اس سے مسائل حل ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ پریس کلبز اور بار کونسلز نے اپنے الیکشنز ای وی ایم پر کروانے کا مطالبہ کیا ہے، ہم انہیں اس میں سہولت فراہم کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ سکردو پریس کلب بھی اپنے انتخابات ای وی ایم پر کروائے، ہم سہولت فراہم کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں