78

جی بی حکومت کا تاریخی و عوامی امنگوں کا آئینہ دار بجٹ پیش،گلگت بلتستان کی تعمیر و ترقی کیلئے خصوصی دلچسپی،شاہراوں کیلئے 103ملین کی رقم جاری

گلگت (نمائندہ خصوصی) کل پیش ہونے والا وزیراعلی خالد خورشید کی حکومت گلگت بلتستان کا پہلا بجٹ اپنے ہجم، ترجیحات و منصوبہ بندی کے اعتبار سے تاریخی، مثالی و عوامی امنگوں کا آئینہ دار ہوگا۔یہ ایک غیر روایتی بجٹ ہوگا جو ہر خاص و عام کے لئے بڑے سرپرائز و خوشگوار حیرت کا سبب بنے گا۔ سنجیدہ و نیک نیت مخالف و نقاد معترف ہونگے جبکہ دیگر کا ردعمل دیدنی ہوگا۔یہ بجٹ ان سوالوں کے بھی جواب دیگا جو گزشتہ 7 دہائیوں میں کسی نے پوچھے بھی نہیں۔یہ بجٹ ان مسائل کے بھی حل پیش کریگا جن کے بارے میں ماضی کے حکمران سوچنے کی بھی صلاحیت نہی رکھتے تھے۔ یہ بجٹ منتخب سیاسی قیادت کی اجتماعی حکمت و بصیرت کا عکاس ہوگا جو مستقبل کے حکمرانوں کے لئے نئے بلند معیار طے کریگا۔ یہ بجٹ عوام گلگت بلتستان کو درپیش مسائل کے پائیدار و مستقل حل کیلئے نئی راہیں کھولے گا۔یہ بجٹ گلگت بلتستان کے وسائل کو بہترین انداز میں زیر استعمال لاکر خطے کو معاشی طور پر خود انحصار بنانے کی منزل کا پہلا سنگ میل ہوگا۔ یہ بجٹ وزیراعلی خالد خورشید خان کی گلگت بلتستان و اسکی عوام بلخصوص کمزور طبقوں کی معیار زندگی کو بلند تر کرنے اور انکو معاشی، صیحت و تعلیم عامہ کے حوالے سے زبردست احساس تحفظ دینے کے گہرے عزم و اس کے لئے گزشتہ 6 ماہ میں خلوص دل و نیک نیتی سے کی جانے والی انتھک محنت کی عملی تصویر پیش کریگا۔
وزیراعلی گلگت بلتستان خالد خورشید کی زیر صدارت اجلاس ہو ا جس میں انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی معیار کے میڈیکل و نرسنگ کالج بنائینگے، میڈیکل و نرسنگ کالج پورے ملک کے لئے ایک مثال بنیں گئے،اجلاس میں وزیراعلی کو میڈیکل کالج کے قیام کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلی نے کہا کہ گلگت بلتستان میں بین الاقوامی معیار کا میڈیکل و نرسنگ کالج بنائینگے جو پورے ملک کے لئے ایک مثال بنے گا۔ پورے ملک سے طلباء و طالبات میڈیکل و نرسنگ کی تعلیم حاصل کرنے کے لئے گلگت آئینگے۔ اس سے منسلک ہسپتال سے گلگت بلتستان کے عوام کو علاج و معالجہ کی بہترین سہولیات میسر ہونگی۔

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید کی گلگت بلتستان کی تعمیر و ترقی کیلئے خصوصی دلچسپی اور کوششو ں کے مثبت نتائج سامنے آرہے ہیں۔ وزیراعلیٰ گلگت بلتستان کی چیئرمین نیشنل ہائی وے اتھارٹی(NHA) کیپٹن (ر)خرم آغا سے ملاقات میں ریورویو روڈ گلگت کنوداس آر سی سی پل تا ہینزل سیکشن کی توسیع و تعمیر کیلئے این ایج اے نے103ملین کی رقم جاری کردی ہے۔ ایک مہینے میں اس منصوبے پر عملی کام کا آغاز ہوگا۔ اس اہم منصوبے سے گنجان آبادی والے علاقے گلگت شہر، ہینزل اور بسین میں رہنے والی آبادی کو بہترین ذرائع نقل و حمل کی سہولت میسر آئیگی اور ضلع غذر جانے والی ٹرانسپورٹ بھی گنجان آبادی والے علاقوں سے مستفید ہوگی کم وقت میں غذر آمدورفت ممکن ہوسکے گا۔
رقم جاری

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں