45

فیٹف کی گرے لسٹ پاکستان کو دباؤ میں رکھنے کا ذریعہ ہے، وزیر خارجہ شاہ محمود قرشی

اسلام آباد(نیوزمارٹ ڈیسک) پاکستان کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ گرے لسٹ میں رکھنا پاکستان پر دباؤ برقرار رکھنے کی کوشش ہے۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام سوال یہ ہے میں گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ فیٹف کی گرے لسٹ پاکستان کو دباؤ میں رکھنے کا ذریعہ ہے، فیٹف کو سیاسی مقاصد کے لیے سیاست زدہ کیا جا رہا ہے، ریکارڈ پر ہے فیٹف سے متعلق یہ کئی بار کہہ چکا ہوں۔

شاہ محمود کا کہنا تھا بھارت فیٹف پلیٹ فارم کو سیاسی طور پر استعمال کرنا چاہتا ہے، ہم نے ٹھوس اقدامات اٹھائے ہیں، بلاشبہ ان اقدامات میں ہمارا ہی مفاد ہے، لیکن ٹھوس اقدامات کے باوجود ہم پر گرے لسٹ کی تلوار لٹکائے رکھنا درست نہیں۔

یاد رہے کہ 23 مئی کو وزیر خزانہ شوکت ترین نے اس امید کا اظہار کیا تھا کہ جون تک پاکستان ایف اے ٹی ایف گرے لسٹ سے نکل جائے گا، زیادہ تر شرائط پوری کر دی ہیں اور اب معاملہ زیادہ تر سیاسی رہ گیا ہے۔

تاہم گزشتہ روز فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کے صدر ڈاکٹر مارکوس پلیئر نے واضح کیا کہ پاکستان کا نام گرے لسٹ میں برقرار رہے گا، آخری ہدف کے حصول تک پاکستان گرے لسٹ میں رہے گا، انہوں نے کہا پاکستان دہشت گرد تنظیموں کے سینئر کمانڈرز کو سزائیں دینے کے ہدف کو پورا کرے، پاکستان کو فیٹف کے نئے ایکشن پلان پر مکمل عمل کرنا ہوگا اور اپنی انویسٹی گیشن کے طریقہ کار کو بہتر بنانا ہوگا۔

’’آخری ہدف کے حصول تک پاکستان گرے لسٹ میں رہے گا‘‘

وزیر خارجہ نے پروگرام میں کہا کہ ہم نے 14 بل ایسے منظور کیے جو ہمارے ہی مفاد میں تھے، ہم مفادات کو سامنے رکھتے ہوئے فیٹف نکات پر عمل کر رہے ہیں، فیٹف نے ہمارے 26 نکات پر عمل درآمد کی تعریف بھی کی ہے، تاہم اب گرے لسٹ کے ذریعے پاکستان کو دباؤ میں رکھا جا رہا ہے، جو درست نہیں ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں