54

ایل این جی کی کمی سے نمٹنے کے لیے پٹرولیم ڈویژن نےپلان تیار کرلیا

اسلام آباد(نیوزمارٹ ڈیسک)تفصیلات کے مطابق پہلے ایل این جی ٹرمینل کی بندش کے دوران دوسرا ٹرمینل 600 ایم ایم سی ایف ڈی گیس فراہم کرے گا۔

ذرائع کے مطابق 4 جولائی تک دونوں ٹرمینلز سے گیس کی فراہمی 824 ایم ایم سی ایف ڈی تک پہنچ جائے گی اور 5 جولائی سے ایل این جی کا پہلا ٹرمینل گیس فراہمی شروع کردے گا۔

ترجمان وزارت توانائی کے مطابق 5 جولائی کو دونوں ٹرمینلزسے گیس فراہمی 1152 ایم ایم سی ایف ڈی ہوجائے گی، گیس کی قلت کے دورانیے میں گھریلو صارفین کمرشل اور پاورسیکٹر کو بلاتعطل گیس فراہم کی جائے گی۔

ترجمان وزارت توانائی کا کہنا ہے کہ گیس شارٹفال سے نمٹںے کے لئے سی این جی، سیمنٹ سیکٹر کو محدود گیس فراہم کی جارہی ہے، نان ایکسپورٹ انڈسٹری کو بھی گیس فراہمی محدود کردی گئی ہے، گیس کی قلت سے بچنے کے لیے اضافی مقامی گیس سسٹم میں شامل کی جارہی ہے۔

ترجمان وزارت توانائی نے بتایا ہے کہ بجلی کی طلب کو پورا کرنے کے لیے فرنس آئل اور ڈیزل سے بجلی پیدا کی جارہی ہے، پٹرولیم ڈویژن کی جانب سے گیس پیداوار بڑھانے سے متعلق ریفائنریز کو ہدایات جاری کردی گئی ہے، پاور پلانٹس کو مقامی گیس کی فراہمی معمول سے بڑھا دی گئی ہے۔

ترجمان کا کہنا یہ بھی ہے کہ پی ایس او فرنس آئل کے دو کارکوز منگوانے کے لیے ٹینڈر جاری کرنے کے لیے ہدایات جاری کردی گئی ہے، پی ایس او کو پاور سیکٹر کو تیل کی فراہمی بڑھانے کے احکامات دیئے گئے ہیں، 31 جولائی سے پہلے پہلے فرنس آئل کے دو کارگوز ملک میں پہنچ جائیں گے۔

ترجمان وزارت توانائی نے مزید بتایا ہے کہ پی ایس او نے لوسلفر فرنس آئل کے دو کارگوزکے لیے ٹینڈرز دے دیئے ہیں، 25 جولائی سے پہلے پہلے ایل ایس ایف او کے دوکارگوز ملک میں پہنچ جائیں گے، گیس کی پیداواری کمپنیوں کو کم سے کم وقت میں گیس کی پیداوار بڑھانے کا کہ دیا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں