62

بجٹ کے اثرات سے مہنگائی میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے، سراج الحق

اسلام آباد(نیوزمارٹ ڈیسک)تفصیلات کے مطابق امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا کہ ملک اس وقت معاشی
بحران ، سیاسی انتشار اور اخلاقی انحطاط کا شکار ہے، آئی ایم ایف کی
مرضی اور حکم نے ملک کی آزادی و مستقبل کو خطرات سے دو چار کردیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومتی پالیسی آئی ایم ایف کے زیر اثر ہونے کی وجہ سے معاشی صورتحال ابتری
کا شکار ہے، حکومت بے روزگاری ، مہنگائی ، لوڈشیڈنگ جیسی اذیتوں کا حل نکالنے میں مکمل ناکام
نظر آتی ہے، حکومت کی تین سالہ کارکردگی نے عوام کے صدمے اور شرمندگی کے احساس کو مزید گہرا کر دیا ہے۔

سراج الحق نے کہا کہ نئے وفاقی بجٹ کے اثرات عوام کے لیے کورونا کی چوتھی لہر سے
زیادہ خطرناک ہیں، اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں ہر روز اضافہ کیا جا رہا ہے، پٹرولیم
مصنوعات ، گیس ، بجلی ، آٹا ، چینی ، گھی کی قیمتوں میں بار بار اضافہ کیا جاچکا ہے۔

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے مزید کہا کہ الیکشن میں پی ٹی آئی کو سپورٹ کرنے
والے آج اس کی کارکردگی سے شرمندگی و مایوسی کا شکار ہیں، وزیراعظم نے عوام سے
کیے گئے وعدے کے برعکس مسلسل اقدامات کیے ہیں، حکومت کے خلاف ہم اپنی تحریک کو جاری رکھیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں