36

ضمنی الیکشن کی شکست پرمسلم لیگ (ن) کا پارٹی بیانیے پر رہنماؤں اور کارکنوں کواعتماد میں لینے کا فیصلہ

لاہور(نیوزمارٹ ڈیسک)پاکستان مسلم لیگ ن نے آزاد کشمیر اور سیالکوٹ کے ضمنی الیکشن میں شکست اور پارٹی بیانیے پر رہنماؤں اور کارکنوں کو اعتماد میں لینے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن نے ملک گیر کنونشن یا اعلی سطحی اجلاس بلائے جانے پر غور کیا ہے۔

ذرائع ن لیگ نےبتایا ہے کہ اعلیٰ سطحی اجلاس یا کنونشن سے پارٹی میں قائد میاں نواز شریف بھی خطاب کریں گے، پاکستان مسلم لیگ ن کی قیادت کا سینئر پارٹی رہنماؤں سے اس حوالے سے مشاورت کا سلسلہ جاری ہے۔

ن لیگی ذرائع نے بتایا ہے کہ کنونشن کا مقصد پارٹی میں پائی جانے والی بے یقینی کی کیفیت کو دور کرنا ہے، کنونشن میں حکومت کی جانب سے پارٹی کے خلاف کئے جانے والے منفی پراپیگنڈے کا بھر پور جواب دیا جائے گا، کنونشن میں دو مختلف بیانیوں کی بجائے ایک ہی بیانیہ واضع کیا جائے گا، ملک میں آئندہ جنرل الیکشن تک پارٹی کا ایک ہی بیانیہ چلے گا۔

ن لیگی ذرائع نےمزید بتایا ہے کہ صوبے میں ممکنہ بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے کنونشن میں پارٹی رہنماؤں کو پارٹی پالیسی کے حوالے سے اہم ذمہ داریاں بھی دی جائیں گی، کنونشن میں پارٹی کے تمام ارکان سینٹ قومی و صوبائی اسمبلی پارٹی ٹکٹ ہولڈر ، ممکنہ نئے ٹکٹ ہولڈر تمام لوگ شریک ہوں گے، پنجاب و دیگر صوبوں سے پارٹی کے منتخب تمام بلدیاتی نمائندے بھی شرکت کریں گے، کنونشن سے پارٹی میں قائد میاں نواز شریف پارٹی صدر میاں شہباز شریف ،احسن اقبال، شاہد خاقان عباسی ، خواجہ آصف ،مریم نواز سمیت دیگر خطاب بھی کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں