40

سپیکر کی چیئرمین پبلک اکائونٹس کمیٹی نامزدگی ناقابل قبول ہے، سعدیہ دانش

گلگت(نیوزمارٹ ڈیسک) ممبر جی بی اسمبلی کا کہنا تھا کہ چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی اپوزیشن کا حق ہے اور قومی اسمبلی سمیت تمام صوبائی اسمبلیوں میں اس پارلیمانی روایت پر نامزدگی ہو رہی ہے کیونکہ چیرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے طور پر وزارتوں کے مالی معاملات کا جائزہ لینا ہوتا ہے۔ممبر گلگت بلتستان اسمبلی و صوبائی سیکریٹری اطلاعات پاکستان پیپلزپارٹی سعدیہ دانش نے اسپیکر اسمبلی کی طرف سے اپنے آپ کو ہی بطور چئیرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی نامزدگی کو یکسر مسترد کرتے ہوئے اسے غیرقانونی اور پارلیمانی روایات کے منافی قرار دیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی اپوزیشن کا حق ہے اور قومی اسمبلی سمیت تمام صوبائی اسمبلیوں میں اس پارلیمانی روایت پر نامزدگی ہو رہی ہے کیونکہ چیرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے طور پر وزارتوں کے مالی معاملات کا جائزہ لینا ہوتا ہے، ایسے میں کوئی حکومتی شخصیت کیسے غیرجانبدار انداز میں اپنے ہی حکومت کے وزیروں کے معاملات کا جائزہ لے سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ جی بی میں اپوزیشن لیڈر اور اپوزیشن ممبر کی بجائے اسپیکر اسمبلی کی بطور چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نامزدگی ناقابل فہم اور ناقابل قبول ہے۔ ایک غلط پارلیمانی روایت کو پروان چڑھانے والے سیاسی ناپختگی کا ثبوت دے رہے ہیں، یہ دراصل اپوزیشن لیڈر اور اپوزیشن ممبران سے بغض، حسد اور خوف کی علامت ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی اپنا حق لینا جانتی ہے اور چئیرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی پاکستان بطور اپویشن لیڈر اور اپوزیشن ممبران کا حق ہے۔ پاکستان پیپلزپارٹی دیگر اپوزیشن جماعتوں کے ساتھ مل کر اس حق تلفی پر سخت ردعمل دے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں