15

محکمہ صحت استور، خسرہ روبیلا کمپئین کا آغاز

استور (پناہ نیوز ڈیسک)ملک بھر کیطرح ضلع استور میں بھی خسرہ اور روبیلا قومی بچاو مہم 15نومبر سے 27 نو مبر تک جاری رہے گا۔ضلع استور میں بھی WHO ،یونیسف اور ہیلتھ کی کی ٹیمیں سکولوں ،کالجز اور کمونٹی لیول پر شعور اگاہی بھی دے رہے ہیں ۔ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر صلاةالدین نے میڈیا سے خسرہ ،روبیلا کمپئین کے حوالے سے پریس بریفنگ دیتے ہوٸے کہا کہ محکمہ صحت استور نے خسرہ روبیلا کمپئین کا آغاز کیا ہے ۔ ضلع بھر میں خسرہ اور روبیلا کے 38643 بچوں کو ٹیکہ لگواٸینگے ۔ 18 ٹیمیں خسرہ روبیلا کے ٹیکے لگائینگے۔ضلع بھر میں ٹوٹل 60 ٹیمیں تشکیل دی ہے ۔ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر 2020 /21 میں سروے کیا تو پازیٹو کیس دیامر میں بھی کچھ سامنے آٸے تھے ۔ استور میں 3 کیس آٸے تھے ۔ خسرہ ،روبیلا کی بیماری 15 سال سے کم عمر بچوں کو متاثر کرتی ہیں ۔کل آؤٹ رینج ٹیمیں 42 ہیں جو پورے ضلع میں ویکسین کرینگی۔ ضلع بھر میں ویکسنیشن لگوانے کے لیے 18 فیکسڈ سینٹر کا قیام بھی عمل میں لایا جا چکا ہے ۔ضلع استور میں 38643 بچوں کو خسرہ اور روبیلا کے ٹیکہ لگاٸیں جاٸینگے ۔استور کی عوام ،علما ٕ کرام ، سیاسی اور دیگر نتظیموں سے اپیل ہے کہ اس قومی مہم میں ہیلتھ ٹیموں کے ساتھ بھر پور تعاون کریں ۔ ڈی ایچ او استور نے مذید کہا کہ خسرہ اور روبیلا ٹیکہ کے کوٸی ساٸیڈ ایفکٹ نہیں ۔ اس بیماری میں دانے نکلتے ہیں یہ بیماری کا واٸرس ہوا میں ہوتا جو دوسروں پر منتقل ہوتا ہے ۔اکثر حاملہ خواتین کے یہ مسلہ ہوتا اگر یہ واٸرس اٹیک کرتا ہے تو دوران پیداٸس بچٕے کو ایفکٹ کرتا جس کی وجہ دماغی معزور یا دل کے سوراخ کے ساتھ جسمانی معزور بچے پیدا ہوتے ہے ۔حاملہ خواتین حفاظتی ٹیکہ ضرور لگواٸیں اور اس مہم کے کے بعد پولیو کے قطرے بھی ضرور پلواٸیں اس کوٸی مسلہ نہیں ۔اگر آپ کسی کی پرشیانی کا سامنہ کرنا پڑا تو ڈاکٹر اور ہیلتھ کے زمہ داران سے رابطہ کریں اور مطمٸن ہو کر ٹیکے لگاٸیں تاکہ بچوں کا مستقبل محفوظ ہو گا ۔ انہوں کہا کہ اس قومی مہم میں ہم نے ہماری بہن ساجدہ صداقت کو اپنے ساتھ رکھا جسکو ایک سیاسی ورکر طور پر نہیں بلکہ سوشل ورکر کے طور پر ہمارے ساتھ رکھا جو ہمارے ساتھ بڑھ چڑھ حصہ لر رہی ہے ۔ اس موقعے پر پاکستا ن تحریک انصاف کی سینٸر ناٸب صدر ساجدہ خواتین وینگ جی بی ساجدہ صداقت نے کہا کہ میں یہ از سوشل ورکر ہیلتھ کے ساتھ ملکر قوم کو شعور اگاہی دے رہے ہیں یہ قومی مہم ہم سب کی زمہ داری ہے اس مہم میں بڑھ چڑھ کر ہم سب کو حصہ لینا چاٸے ۔ اور سب سے زیادہ کردار میڈیا کے ہے ۔ میڈیا سے میں پرسنلی ریکوسٹ کرتی ہوں کہ آپ اپنا کردار مثبت انداز میں ادا کریں الیکٹرونک ، پرنٹ سوشل میڈیا سمت دیگر میڈیا ٹولز کے زریعے عوام کو شعور اگاہی دیں تاکہ ہم سب کا بچوں کا مستقبل محفوظ ہو۔ میری جس طرح کا محکمہ ہیلتھ کو تعاون چاٸے کرنے کے لیے تیار ہوں ۔ میں بھی استور کی عوام اور تمام اسٹیک ہولڈر سے درخواست ہے کہ اس مہم کے دوران ہیلتھ کی ٹیموں کے ساتھ بھر پور تعاون کریں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں