18

پہاڑ کے اوپر قبر ۔۔ پہاڑوں کے اوپر یہ قبر کس کی ہے اور یہ کیسے بنائی جاتی ہے؟ جانیے اس قبر سے متعلق منفرد اور حیرت انگیز معلومات

ایسی کئی حیرت انگیز مقامات اس دنیا میں موجود ہیں جہاں تاریخی اور
دلچسپ واقعات رونما ہوئے ہوتے ہیں۔ اس خبر میں بھی آپ کو ایک ایسے ہی مقام سے متعلق بتائیں گے جس میں پہاڑوں پر ایک قبر واقع ہے۔آزاد کشمیر میں دانگی ہلز پر ایک ایسی قبر موجود ہے جو کہ کئی سالوں سے یہاں موجود ہے۔ حضرت سخی زندہ پیر بابا کا مزار آزاد کشمیر میں اپنی جگہ کی وجہ سے مشہور ہے۔پُر خطر اور ٹیڑھے راستوں سے ہوتا ہوا، پہاڑ کی اونچائی پر واقع یہ مزار اپنی مثال آپ ہے۔ اس قبر کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ یہ اللہ کے ولیوں میں سے ایک ولی کی قبر ہے۔پاکستان میں ویسے تو کئی ایسے مقامات ہیں جہاں اللہ کے ولیوں کی قبریں موجود ہیں، اسی طرح ان ولی کی قبر بھی ایک خاص وجہ سے پہاڑ پر بنائی گئی ہے۔جس مقام پر حضرت سخی زندہ پیر بابا کی قبر اتنی اونچائی پر واقع ہے کہ پاکستانی علاقے بھی واضح طور پر دکھائی دیتے ہیں۔ جبکہ آزاد کشمیر کے جنگلات بھی دکھائی دیتے ہیں، لیکن اتنی اونچائی پر بیٹھ کر نظارے کرنا انسان کو لطف اندوز کرتا ہے۔اس ویڈیو میں بھی یہی بتایا گیا ہے کہ حضرت پیر سخی کو اونچائی پر پہنچ کر عبادت کرنا بے حد پسند تھا، یہی وجہ تھی کہ وہ اس مقام پر بیٹھا کرتے تھے اور تنہائی اور خاموشی میں عبادت میں مشغول رہا کرتے تھے۔اس ویڈیو میں وہ مقامات بھی دکھائے گئے جہاں پراللہ کے ولی بیٹھ کر عبادت کیا کرتے تھے، جسے آج بیٹھک شریف کے نام سے یاد کیا جاتا ہے۔اس مقام پر دریائے جہلم بھی واقع ہے جبکہ اپنا کشمیر نامی چینل پر بتایا گیا ہے کہ ایک ولی پاکستانی پہاڑ پر جبکہ دوسرے ولی اسی مقام پر موجود ہوتے تھے اور محو گفتگو ہوا کرتے تھے، مگر دریائے جہلم میں پانی کے شور کی وجہ سے ان کی بات چیت میں خلل ہوتا تھا۔ولی کی جانب سے دریائے جہلم کے پانی کو کہا گیا کہ چُپ ہو جا، تو وہ دن ہے اور آج کا دن ہے، دریائے جہلم کا پانی خاموش ہو گیا ہے۔ یہ واقعہ اپنا کشمیر نامی یوٹیوب چینل پر بتایا گیا ہے۔ جو کہ مقامی چینل ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں