16

نواز شہباز ایک اور بیٹھک‘ اہم فیصلے‘عمران خان کی گرفتاری زیر غور

لندن /اسلام آباد ( نیوزمارٹ ڈیسک ) وزیراعظم شہباز شریف اور ن لیگی قائد نواز شریف کی ایک اور اہم ملاقات ہوئی، ملک کی معاشی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا اور بحالی کے اقدامات پر بھی مشاورت کی گئی۔وزیراعظم شہباز شریف سابق وزیراعظم نواز شریف سے تیسری ملاقات کے لئے حسن نواز کے دفتر میں پہنچے۔ ملاقات کے دوران سابق وزیراعظم کی گرفتاری کا معاملہ بھی زیر غور آیا‘نئے الیکش پر بات چیت کےءدوران فیصلہ کیا گیا کہ فوری الیکشن نہیں ہونگے‘ حکومت اپنی مدت پوری کریے گی اس موقع پر وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ نے کہا کہ دورے میں ایک دن کی توسیع مزید مشاورت کیلئے کی گئی، اگر شہباز شریف کل عدالت نہ پہنچ سکے تو ایک دن کی غیر حاضری کی درخواست دے دیں گے، ڈالر کی بڑھتی قیمت گزشتہ حکومت کی معاشی تباہی کا نتیجہ ہے، عمران خان نوجوانوں کو گمراہ کر رہا ہے۔وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ خاں نے کہا ہے کہ عمران خان کیخلاف کرپشن کے کئی مقدمات ہیں انہیں گرفتار کیا جا سکتا ہے‘ ہر روز فوجی قیادت کو دعوت دینے والے نے آج پالش اور برش اٹھالیا ہے ،ایک دن گالی، اگلے دن قوالی باس اور چپڑاسی کی سیاسی زندگی کی کل کہانی ہے، اب الیکشن ہی ہوں گے، باس اور چپڑاسی اسی لئے پریشان ہیں ،ملک کی ترقی پر جھاڑو پھیرنے والے اب جمہوری نظام پر جھاڑو پھیرنا چاہتے ہیں،چار سال میں کمر توڑ مہنگائی کرنے والے اب سب سے اونچی آواز میں مہنگائی کے ‘بین’ ڈال رہے ہیں۔ شیخ رشید کے بیان پر رد عمل دیتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ نے کہا چار سال معیشت تباہ کر کے ملک کو ڈیفالٹ کے کنارے پہنچانے والے یہ منحوس اعلان بھی آج خود ہی کر رہے ہیں ۔ یہ وہ منحوس کردار ہیں جو ڈالر کی قیمت بڑھنے پر اس لئے خوش ہوتے ہیں کہ انہیں سیاسی فائدے کی خیرات مل جائے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں