43

گلگت بلتستان کاسالانہ ترقیاتی پلان(ADP) کے حجم کو25 ارب کیا جائے،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید

گلگت (سٹاف رپورٹر)وزیراعلی گلگت بلتستان خالد خورشید اور ڈپٹی چیئرمین پلاننگ کمیشن کے مابین اسلام آباد میں ملاقات ہوئی۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ گلگت بلتستان نے گلگت بلتستان ڈولپمنٹ پلان کے تحت میگا ترقیاتی منصوبوں کی متعلقہ فورم سے منظوری پر شکرادا کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان کے سالانہ ترقیاتی پلان(ADP) کے حجم کو بھی15 ارب سے بڑھا کر25 ارب کیا جائے تاکہ صوبے کی ترقی اور عوامی ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے اہم ترقیاتی سکیموں کو سالانہ ترقیاتی پلان میں شامل کیا جاسکے۔ ڈپٹی چیئرمین پلاننگ کمیشن نے گلگت بلتستان کے سالانہ ترقیاتی پلان میں اضافے کو یقینی بنانے کیلئے متعلقہ فورمز میں بات کی جائیگی۔وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے وفاقی وزارت واٹر ریسورسز میں ہونے والے اجلاس میں شرکت کی۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ گلگت بلتستان نے کہا کہ عطاء آباد54 میگاواٹ ہائیڈرل پاور پراجیکٹ علاقائی طور پر انتہائی اہمیت کا حامل منصوبہ ہے۔ منصوبے کی افادیت کو مدنظر رکھتے ہوئے ایکنک کے اجلاس سے قبل منسٹری آف واٹر رسیوریز سے عطاء آباد پاور پراجیکٹ کی توثیق کی جائے تاکہ اس اہم منصوبے کی بروقت متعلقہ فورم سے منظوری مل سکے۔ اجلاس میں ایڈیشنل چیف سیکریٹری گلگت بلتستان، ایڈیشنل سیکریٹری واٹر اینڈ پاور نے بھی شرکت کی۔ وفاقی وزارت واٹر ریسورسز کی جانب سے اجلاس میں عطاء آباد پراجیکٹ کے PC-1 کووفاقی وزارت پلاننگ اینڈ ڈولپمنٹ فوری طور پر بھیجے کی یقین دہانی کرائی تھی۔وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید اور چیئرمین فیڈرل پبلک سروس کمیشن کے مابین اسلام آباد میں ملاقات ہوئی اس موقع پر صوبائی وزیر خزانہ اور صوبائی وزیر صحت نے بھی وزیراعلیٰ کے ہمراہ اجلاس میں شرکت کی۔ وزیراعلیٰ گلگت بلتستان نے چیئرمین فیڈرل پبلک سروس کمیشن زاہد سعید سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گلگت اوربلتستان کیلئے الگ ریجنل دفاتر کا قیام عمل میں لایا جائے گلگت بلتستان کے امیدواروں (CANDIDATE) کیلئےCSS کے انٹرویو کا بندبست گلگت میں کیا جائے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ گلگت بلتستان کیلئے فیڈرل پبلک سروس کمیشن کے تحت (CLEAR VACANT POSTS)خالی اسامیوں کو جلد مشتہر کیا جائے۔ انٹرویوز بھی ترجیحی بنیادوں پر کیے جائیں۔ چیئرمین فیڈرل پبلک سروس کمیشن زاہد سعید نے کہا کہ گلگت بلتستان کیلئے مقابلے کے امتحانات(COMPETATIVE EXAMS) جلد کرنا چاہتے تھے لیکن کرونا کی وجہ سے اس میں تاخیر ہوئی۔اکتوبر2021 تک گلگت بلتستان کیلئے مقابلے کے امتحانات کے انعقاد کو ہر صورت یقینی بنایا جائیگا۔ فیڈرل پبلک سروس کمیشن کے جانب سے چند اسامیوں کو مشتہر کرنے کیلئے حوالے سے صوبائی حکومت کی جانب سے مذید تعاون اور رہنمائی درکار ہے۔ ان اعتراضات کو دور کرنے کی ضرورت ہے اور101اسامیوں پر عدالتوں میں کیسز ہیں۔ زیر سماعت کیسز کو جلد حل کرنے کی بھی ضرورت ہے تاکہ تمام اسامیوں کو فوری طور پر مشتہر کیا جاسکے۔ وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے محکمہ سروسز کو موقع پر ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ فیڈرل پبلک سروس کمیشن کے جانب سے چند اسامیوں کو مشتہر کرنے کے حوالے سے فوری طور پر رابطہ کر کے ہر ممکن تعاون یقینی بنائیں تاکہ جلد ان اسامیوں کو مشتہر کیا جاسکے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ عدالتوں میں زیر سماعت کیسرز کو جلد نمٹانے کیلئے بھی اقدامات کررہے ہیں۔ امید ہے معزز عدالتیں جلد ان کیسز کے بارے میں فیصلے کریگی۔ وزیراعلیٰ نے محکمہ سروسز کوفوری طور پر فیڈرل پبلک سروس کمیشن سے رابطہ کرکے فیڈرل پبلک سروسز کی جانب سے مختلف اسامیوں کو مشتہر کرنے کے حوالے سے تمام مسائل کو حل کریں۔ وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے گلگت بلتستان کے حوالے سے خصوصی دلچسپی لینے پر چیئرمین فیڈرل پبلک سروس کمیشن کا شکریہ ادا کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں