44

امریکی کمپنیاں تنا ؤکے باوجود چین کو نہیں چھوڑیں گی،امریکی مشیر

واشنگٹن(نیوزمارٹ ڈیسک)البرائٹ سٹون برج گروپ کے ایک سینئر مشیر کینیتھ جاریٹ نے ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ اگرچہ وائٹ ہاس کے عہدیدار نے چین کے ساتھ سرگرمیاں ختم کرنے کیلئے خبردار کیا ہے لیکن امریکی کاروبار چینی منڈی سے نہیں نکلیں گے۔وائٹ ہاس کے انڈو -پیسیفک پالیسی کے معاون کرٹ کیمپ بیل نے گزشتہ ماہ آن لائن مباحثہ میں کہا تھا کہ جس عرصہ کو بڑے پیمانے پر چین کے ساتھ سرگرمیاں بتایا گیا تھا اپنے اختتام کو پہنچ گیا ہے۔فوربز کے مضمون کے مطابق جاریٹ نے کہا کہ بہرحال امریکی کاروبار چین سے نہیں نکلیں گے اور تعاون حاصل کرنا جاری رکھیں گے، انہوں نے شنگھائی میں امریکی ایوان تجارت کے صدر کے طور پر بھی خدمات انجام دی ہیں۔جاریٹ نے کہا کہ یہ سمجھنا بہت اہم ہے کہ مقابلے کے مجموعی دائرہ کار میں بھی تعاون کی گنجائش موجود ہے، انہوں نے مزید کہا کہ امریکی کمپنیاں امریکہ اور چین کے مابین تجارتی بات چیت کو مفید تعاون کے طور پر دیکھتی ہیں جو تبدیل ہونے کا امکان نہیں ہے۔جاریٹ نے کہا کہ زیادہ تر امریکی کمپنیاں چین میں کامیاب ہیں اور اس کامیابی کو اپنی عالمی کارکردگی میں اہم معاون کے طور پر دیکھتی ہیں، وہ چینی منڈی سے نکلنے کی خواہشمند نہیں ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں