14

ترکیہ کے شام میں کرد پارٹی کے ٹھکانوں پر بمباری، 12 ہلاکتیں

انقرہ (نیوزمارٹ ڈیسک) ترکیہ نے استنبول بم دھماکے میں کرد پارٹی کے ملوث ہونے پر شام میں ان کے ٹھکانوں پر فضائی بمباری کی، مانیٹرنگ گروپ نے حملے میں 12 جنگجوؤں کی ہلاکت کا دعویٰ کیا ہے۔عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق ترکیہ کے وزیر دفاع نے اپنی ٹویٹ میں نہایت سخت زبان استعمال کرتے ہوئے لکھا کہ سب کچھ ملبہ بنانے کی گھڑی آچکی ہے۔ انھوں نے ناشائستہ الفاظ استعمال کرتے ہوئے مزید لکھا کہ ان کو اپنے حملوں کی بڑی قیمت ادا کرنا ہوگی۔ترک وزیر دفاع نے اس ٹویٹ کے ساتھ ایک تصویر بھی شیئر کی جس میں ایک لڑاکا طیارے کو اُڑان بھرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ اس کے بعد اپنی اگلی ٹوئٹس میں انھوں نے بتایا کہ ٹھیک ٹھیک نشانے لے کر دہشت گردوں کے ٹھکانے تباہ کردیئے۔ استنبول بم دھماکے کی ملزمہ کے گھر چھاپے اور گرفتاری کی ویڈیو وائرل ترکیہ کے فوجی ذرائع نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ حملے میں کرد پارٹی کے اسلحہ خانے، خندقیں، فیکٹری، تربیت گاہ اور کمین گاہوں کو مٹی کا ڈھیر بنادیا گیا۔ یہ کارروائی استنبول بم دھماکے کے جواب میں کی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں