54

ملازمین کی تنخواہوں میں 25فیصداضافہ کیا جائے، حفیظ الر حمن

گلگت (نمائندہ خصوصی)گورنر راجہ جلال نے ہاوسنگ سکیم کے نام پر تین سال قبل ڈی سی آفس گلگت میں منصوبے کا افتتاح کرکے 30ہزار لوگوں سے فی کس 100روپے ہتھیالئے
ہیومین رائٹس ونگ جہاں بھی دعوت دیگی وہاں مسلم لیگ کی قیادت بھرپور حصہ لیگی اور اپنا پارٹی منشور گلگت بلتستان کے نوجوانوں تک پہنچائے گی سابق وزیر اعلی کا اجلاس سے خطاب
سابق وزیراعلی و صوبائی صدر مسلم لیگ ن جی بی حافظ حفیظ الرحمان بلتستان کے سرکاری ملازمین کی بنیادی تنخواہ میں 25 فیصد اضافہ کیا جائے ن لیگ کی حکومت نے وفاق کی مخالفت کے باوجود 15 فیصد بنیادی تنخواہ میں اضافہ کیا۔گورنر راجہ جلال نے ہاوسنگ سکیم کے نام پر تین سال قبل ڈی سی آفس گلگت میں منصوبے کا افتتاح کرکے 30ہزار لوگوں سے فی کس 100روپے ہتھیالئے قوم کو بتایا جائے کہ وہ منصوبہ زمین کھاگئی یا آسمان۔
ہیومین رائٹس ونگ پی پی پی گلگت بلتستان کے صدر دلپزیر قادری سینئر نائب صدر وسیم رانا جنرل سیکریٹری انعام الحسن اور فنانس سیکریٹری عدنان عالم کی سابق وزیراعلی حافظ حفیظ الرحمان سے طویل نشت، نشت تقریبا 2 گھنٹے تک جاری رہی سابق وزیر اعلی سمیت سابق مشیر شمس میر،سابق مشیر شہزادہ مقپون،رہنما ن لیگ طفیل احمد،پریس کواڈینیٹر حبیب شاکا نے شرکت کی ہیومین رائٹس ونگ کے صدر دلپزیر قادری اور نائب صدر وسیم رانا نے سابق وزیراعلی سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ انسان حقوق اور ون پوائٹ اینجنڈا (عبوری صوبہ) پر مسلم لیگ ن کا کیا موقف رہا ھے اور ن لیگ کے منشور میں آئینی صوبے کو شامل نہ کرنے کے کونسے وجوہات شامل ھے جس پر سابق وزیر اعلی نے ہیومین رائٹس ونگ کی کوششوں کو سرہاتے ہوئے تاریخ گلگت بلتستان سے لیکر اب تک ہونے والے سیاسی اور انتظامی اصلاحات کا بھرپور اور طویل جواب دیتے ہوئے کہا کہ ہیومین رائٹس ونگ جہاں بھی دعوت دیگی وہاں مسلم لیگ کی قیادت بھرپور حصہ لیگی اور اپنا پارٹی منشور گلگت بلتستان کے نوجوانوں تک پہنچائے گی۔
اجلاس

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں