28

نیشنل فوڈ سیکورٹی اینڈ ریسرچ کی زیرصدارت اعلی سطحی اجلاس کپاس کی بوائی اور مقررہ اہداف پر پیشرفت کا تفصیلی جائزہ لیا گیا

اسلام آباد(نیوزمارٹ ڈیسک)وفاقی وزیر برائے نیشنل فوڈ سیکورٹی اینڈ ریسرچ سید فخر امام کی زیرصدارت اعلی سطح کا اجلاس آج اسلام آباد میں ہوا جس میں وزارت نیشنل فوڈ کے اعلی حکام اور صوبائی وزارتوں کے نمائندوں نے شرکت کی۔اجلاس میں کپاس کی مداخلتی قیمت کے تعین سے متعلق امور پر تفصیلی مشاورت کی گئی۔
وزارت نیشنل فوڈ سیکورٹی اینڈ ریسرچ کی طرف سے جاری بیان کے مطابق شرکاءکو بتایا گیا کہ پنجاب میں 1.6 ملین ہیکٹر رقبے کے بجائے 1.35 ملین ہیکٹر رقبے پر کپاس کی بوائی مکمل ہو چکی ہے جبکہ سندھ میں 0.64 ملین ہیکٹر رقبے میں سے 0.533 ملین ہیکٹر پر بوائی کی جا چکی ہے۔ اس طرح 2.32 ملین ہیکٹر رقبے پر کپاس کی بوائی کے مقابلے میں صرف 1.96 ملین ہیکٹر رقبے پر کپاس کی بوائی کی گئی ہے جو کہ اہداف کا مجموعی طورپر 84فیصد رقبہ بنتا ہے۔ وزارت زراعت سندھ کے نمائندوں نے شرکاءکو بتایا کہ پانی کی قلت کے باعث مقررہ ہدف کے مقابلے میں کپاس کی کم بوائی ہوئی ہے۔
اس موقع پر وفاقی وزیر سید فخر امام نے کہاکہ رواں سال کاٹن کا پیداری ہدف 10.51 ملین گانٹھیں رکھا گیا ہے اور توقع ہے کہ پاکستان یہ ہدف حاصل کرنے میں کامیاب ہو جائے گا۔
٭٭٭٭

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں