18

غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیز کے خلاف آر ڈی اے کی کارروائیاں جاری ہیں ، فردوس عاشق اعوان

راولپنڈی (نیوزمارٹ ڈیسک)معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیز کے خلاف آر ڈی اے کی کارروائیاں جاری ہیں۔
تفصیلات کے مطابق معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے آر ڈی اے میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ماضی میں اداروں میں گدھ بٹھا کر نوچا گیا اب آر ڈی اے خسارے سے باہر آ چکا ہے۔
انہوں نے کہا کہ راولپنڈی میں آبادی کے لحاظ سے ایک ملین گھروں کی ضرورت ہے اور دو ملین گھروں کی کمی ہے ، عمران خان کا عزم ہے اداروں کو مضبوط کرنے کا ، ایفورڈ ایبل ہاوسنگ کی جانب جانا ایک چیلنج ہے،ہاؤسنگ سوسائٹیز کو قانونی دائرہ کار میں لانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

معاون خصوصی برائے اطلاعات نے کہا کہ آر ڈی اے کی حدود مین 386 ہاؤسنگ سوسائٹیز ہیں،62 منظور،60 کی سکریٹری جاری ہے،264 ہاؤسنگ سوسائٹیز غیر قانونی ہیں ، ایک سو ہاؤسنگ سوسائٹیز کا زمین پر وجود نہیں لیکن وہ پلاٹ بیچ چکے ہیں۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیز کے خلاف 112 ایف آئی آرز درج کروائی گئیں،135 کے دفاتر سیل کئے گئے ، سوسائٹیز کے ہاتھ لٹنے والوں کی زیادہ تعداد کا تعلق اوورسیز پاکستانیوں سے ہے ، آر ڈی اے کی ویب سائیٹ پر ہاؤسنگ سوسائٹیز کی تفصیلات اپلوڈ کر دی گئیں۔

انہوں نے کہا کہ ہاؤسنگ سوسائٹیز کے حوالے سے معاملہ نیب میں لے جایا گیا اور پیمرا کو بھی آگاہ کر دیا گیا ہے ، 30 دن کے ٹائم فریم میں رہائشی این او سی دینے کا پابند ہے ، مزدور اور پسے طبقے کے لئے ایفورڈ ایبل ہاؤسنگ سکیم پلان کیا جا رہا ہے۔

معاون خصوصی برائے اطلاعات نے کہا کہ ایک سال میں 1300 نقشے پاس کرکے عوام کی ضرورت میں رکاوٹ نہیں ڈالی گئی ، آر ڈی اے راولپنڈی میں تین ٹو لیول انڈر پاس بنانے جا رہی ہے ، آر ڈی اے نالہ لئی کی اربن ری جنریشن کی طرف بھی جا رہی ہے۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ لیڈر شپ لیڈ کرنے کو تیار ہو تو ادارے کام کرتے ہیں،وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ کی زیر نگرانی آر ڈی اے ریفارمز کی جانب بڑھا ہے ، لاہور دھماکے میں 4 قیمتی جانیں ضائع ہوئیں،بچہ بھی شامل ہے،چھے زخمی انتہائی تشویشناک حالت میں زیر علاج ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جب معیشت آگے بڑھنے لگتی ہے،تو ایسی سازش ہو جاتی ہے جو چیلنج بن جاتا ہے ، لاہور واقعہ سے جڑی قیاس آرائیوں سے گریز کیا جائے،اس حوالے سے تحقیقات جاری ہیں،جلد ملزمان گرفتار کرلیں گے۔

معاون خصوصی برائے اطلاعات نے کہا کہ ملک کے دشمنوں اور مخالفوں کو بے نقاب کریں گے،یہ حکومت کی نظروں سے اوجھل نہیں رہا ، شہداء کو دس لاکھ اور زخمیوں کو پانچ اور ایک لاکھ کی امداد دی جائے گی ، لاہور دھماکہ سے املاک کو پہنچنے والے نقصان کے حوالے سے کمشنر لاہور کی سربراہی میں کمیٹی بنائی گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں