30

فائیو جی ٹیکنالوجی اور کورونا ویکسین پر پابندی لگانے کی درخواست مسترد

کراچی(نیوزمارٹ ڈیسک)سندھ ہائی کورٹ نے فائیو جی ٹیکنالوجی اورویکسین پرپابندی لگانے کی درخواست مسترد کردی اور دراخوست گزار پر 25 ہزار روپے جرمانہ عائدکردیا۔سندھ ہائی کورٹ میں فائیوجی ٹیکنالوجی اور کوروناویکسین کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی ، عدالت نے کہا فائیوجی ٹیکنالوجی سےدنیافوائدحاصل کررہی، درخواست گزارنےفائیو جی نقصان سےمتعلق ایک لفظ بھی نہیں بتایا۔عدالت نے استفسار کیا جس ٹیکنالوجی سےدنیافائدہ اٹھا رہی ہمارےلئےنقصان دہ ہوسکتی ہے ؟ درخواست گزارکاصرف اس بات پر زور تھا ٹیکنالوجی مضر صحت ہے، درخواست میں ایک دستاویزایسی ہےجواسکےموقف کی نفی کرتی ہے۔عدالت نے مزید کہا کہ کوروناویکسین سےمتعلق بھی درخواست گزارشایدباخبرنہیں ہیں، دنیاگزشتہ 2 سال سےاس خطرناک مرض سے دو چار ہے، ایسی بیماری کا دنیا کوکوئی تجربہ نہیں رہا ہے۔عدالتی ریمارکس میں کہا گیا کہ کورونا ویکسی نیشن بیماری کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے ہے،ویکسین سےوائرس کےخلاف قوت مدافعت میں اضافہ ہوگا۔سندھ ہائی کورٹ نے فائیو جی ٹیکنالوجی اورکورونا ویکسین کیخلاف دائر درخواست مسترد کرتے ہوئے دراخوست گزار پر 25ہزار روپے جرمانہ عائدکردیا۔عدالت نے درخواست گزارکو25ہزارروپے ہائیکورٹ کلینک فنڈمیں جمع کرانے کا حکم دیا۔ سندھ ہائی کورٹ میں درخواست امیرجہاں عرف بسمہ نورین کی جانب سے دائرکی گئی تھی ، جس میں درخواست گزارنے فائیو جی اورویکسین پرپابندی لگانےکی استدعا کی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں