23

مری میں برفانی طوفان سے بحران، گاڑیوں میں ٹھٹھر کر 16 سے 19 اموات، شیخ رشید کی تصدیق

مری , مری اور گلیات میں برفانی طوفان سے بدترین بحران پیدا ہو گیا۔ گاڑیوں میں ٹھٹھر کر 16 سے 19 اموات واقع ہوئی۔ وزیرداخلہ شیخ رشید نے تصدیق کر دی۔

گاڑیوں میں مزید سیاحوں کی اموات کا خدشہ ہے۔ ایک گاڑی کا دروازہ کھولنے پر پورا خاندان مردہ حالت میں پایا گیا۔ مری میں شدید سردی کے باعث مرنے والوں میں چار دوست بھی شامل ہیں۔ مردان سے مری آنے والے چاروں دوست گاڑی میں سو گئے جہاں دم گھٹنے سے چاروں جاں بحق ہو گئے۔

مری میں اب تک تین فٹ سے زائد برف ریکارڈ کی گئی۔ ہزاروں سیاح کئی گھنٹوں سے گاڑیوں میں محصور ہیں۔ انتظامیہ ریسکیو کرنے میں مصروف ہے۔ سول آرمڈ فورسز سے مدد طلب کر لی گئی۔ مقامی لوگوں سے بھی مدد کی اپیل کی گئی ہے۔ مساجد میں اعلانات ہونے لگے۔ بیشتر علاقوں میں بجلی اور انٹرنیٹ کا نظام متاثر ہے۔ مری میں ڈیڑھ لاکھ سے زائد گاڑیاں داخل ہو چکی ہیں جس کے بعد مزید انٹری روک دی گئی۔ پھنسے سیاح بھی مری نہ آنے کی اپیل کرنے لگے۔

ادھر وزیراطلاعات فواد چودھری کا بھی کہنا ہے مری اور بالائی سیاحتی مقامات کے لیے ایک جم غفیر رواں دواں ہے۔ انتظامیہ کیلئے اتنی بڑی تعداد میں پھنسے لوگوں کو سہولیات پہنچانا ناممکن ہو چکا۔ شہری سیر کا پلان کچھ روز کیلئے مؤخر کر دیں۔ حکومت اور انتظامیہ کی اپیل کے باوجود شہری مری جانے پر بضد ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں