14

کیٹیگری بی اور سی ممالک سے آنے والوں پر سفری پابندیوں میں نرمی

بیرون ممالک سے آنے والے مسافروں کے لیے ائیر ٹریول پالیسی تبدیل کردی گئی، پاکستان نے سفری پابندیوں میں مزید نرمی کرتے ہوئے اومی کرون پھیلاؤ والے مختلف ممالک کے لیے مختص کردہ کیٹگری بی اور سی ختم کر دی ہے۔

کسی بھی ملک سے ویکسین شدہ ،غیر ملکی اور پاکستانی اب پاکستان آ سکتے ہیں ،بورڈنگ سے 48 گھنٹےپہلے منفی پی سی آر ٹیسٹ رپورٹ دیکھانا ہو گی ، چند کیسز میں پاکستان آنے والے پاکستانیوں کو لازمی ویکسینیشن سے استثنیٰ حاصل ہو گا ، نئی ٹریول پالیسی پر عمل درآمد شروع ہوگیا ہے۔

این سی او سی نے کیٹگری بی اور سی کو ختم کرنے کا باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے، یورپی ممالک سے آنے والے فلائٹس کے مسافروں کا سو فی صد ریپڈ ٹیسٹ کیا جائے گا، سعودی عرب ،عرب امارات اور قطر سے آنے والی کم از کم 50 فی صد فلائٹس کے مسافروں کا ریپڈ ٹیسٹ ہو گا ۔

ریپڈ ٹیسٹ میں کورونا مثبت آنے والے مسافر 10 دن قرنطینہ کریں گے، کورونا مثبت آنے والے مسافروں کا آٹھویں دن پی سی آر ٹیسٹ کیا جائے گا ۔

ویزہ کی مدت ختم ہونے والے ،بیرون ممالک غیر قانونی مقیم پاکستانی اور ڈی پورٹ ہونے والے ،میڈیکل وجوہات ،حاملہ خواتین اور 15 سے 18 سال کی عمر کے پاکستانیوں کو لازمی ویکسین پالیسی سے استثنیٰ حاصل ہو گا۔

15سے 18 سال کی عمر کے پاکستانی مسافروں کو 15 فروری تک بغیر ویکسین پاکستان آنے کی اجازت ہو گی، کورونا صورتحال کو مد نظر رکھتے ہوئے پالیسی کا جائزہ اجلاس 15 فروری کو ہوگا۔

این سی او سی نے تمام ائیر پورٹ پر ریپڈ ٹیسٹ کٹس اور طبی عملے کی زیادہ سے زیادہ موجودگی یقینی بنانے کی ہدایت جاری کر دی ہے، وزارت نیشنل ہیلتھ سروسز ائیر پورٹس پر اضافی ہیلتھ اسٹاف کی تعیناتی یقینی بنائے ۔

وفاق اور صوبائی انتظامیہ کورونا مثبت آنے والے مسافروں کی قرنطینہ ڈراپ تک ٹرانسپورٹ کو یقینی بنائے، وزارت خارجہ کو بیرون ممالک پاکستانی سفارت خانے اور ہائی کمشنرز کو ترجیہی بنیادوں پر آگاہ کرنے کی ہدایت بھی کی گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں